You are here: حماس مصالحت تزویراتی فیصلہ،اسے تباہ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے: بردویل
 
 

مصالحت تزویراتی فیصلہ،اسے تباہ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے: بردویل

E-mail Print PDF

0Pala9770غزہ (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسلامی تحریک مزاحمت ’حماس‘ کے سیاسی شعبے کے سینیر رکن اور جماعت کے مرکزی رہنما صلاح الدین بردویل نے فلسطینی دھڑوں میں مصالحت کے عمل میں رکاوٹیں ڈالنے کی تمام سازشوں کو مسترد کر دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ مصالحت ایک تزویراتی فیصلہ ہے جسے کھوکھلے اقدامات اور اعلانات سے ختم نہیں کیا جا سکتا۔ اس کی کامیابی اور درست سمت میں آگے لے جانے کے لیے کام جاری رکھا جائے گا۔

بردویل نے مزید کہا کہ غزہ کی پٹی میں ملازمین کے حوالے سے قائم کردہ خصوصی انتظامی کمیٹی فروری کے اوائل میں اپنا کام کرنا ختم کردے گی۔

غزہ کی پٹی میں جاری بجلی کے بحران کے بارے میں بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسرائیل کی طرف سے غزہ کو 50 میگاواٹ بجلی بحال کی گئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بجلی کی قیمت رام اللہ حکومت کی طرف سے ادا نہیں کی جا رہی۔ بجلی کے بلز غزہ کے شہریوں کی طرف سے ادا کیے جائیں گے۔ فلسطینی حکومت کے سربراہ رامی الحمد اللہ نے چند روز قبل وزارت داخلہ کو ہدایت کی تھی کہ وہ غزہ کے عوام سے بجلی کے بل جمع کرے۔

صلاح الدین بردویل نے کہا کہ ہم نے رامی الحمد اللہ کو تجویز دی تھی کہ ہم 20 ملین شیکل کی رقم ادا کریں گے جب کہ فلسطینی اتھارٹی 10 فروری تک ملازمین کو ان کی تنخواہیں ادا کردے۔ یا یہ بتائے کہ بجلی کے بلات اور تنخواہیں کی ادائیگی بھی فلسطین حکومت ہی کرے۔

انہوں نے بتایا کہ آنے والے دنوں میں فلسطینی ملازمین کو کم سے کم 1200 اور زیادہ سے زیادہ 2500 شیکل کی رقم تنخواہوں کی صورت میں ادا کی جائے گی۔