You are here: مقالاجات فلسطین میں صیہونی کالونیاں غیرقانونی ہیں: اُردن
 
 

فلسطین میں صیہونی کالونیاں غیرقانونی ہیں: اُردن

E-mail Print PDF

0Pala9859عمان (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اُردن کی حکومت نے فلسطین کے مقبوضہ علاقوں میں صیہونی کالونیوں کو غیرقانونی قرار دیتے ہوئے ان پر پابندی عائد کرنے کے مطالبے کا اعادہ کیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق اردن حکومت کے ترجمان اور وزیر اطلاعات محمد المومنی نےایک بیان میں کہا کہ فلسطین میں صیہونی آباد کاری اور کالونیوں میں توسیع پائیدار امن کے قیام کے لیے تباہ کن اور عالمی قراردادوں کی توہین ہے۔

اردنی وزیر نے کہا کہ اسرائیلی حکومت کی جانب سے غرب اردن میں 1122 نئے مکانات کی تعمیر، 20 صیہونی کالونیوں کی توسیع اور 651 نئے مکانات کے لیے ٹینڈر جاری کرنے کے اقدامات غیرقانونی  اور امن عمل کی تباہی کا موجب بن رہی ہیں۔

اردنی وزیر کا کہنا ہے کہ اسرائیلی طرز عمل اور پالیسیاں یہ ظاہر کرتی ہیں کہ صیہونی ریاست تنازع فلسطین کے دو ریاستی حل کا حامی نہیں اور وہ عملا اس میں مسلسل رکاوٹیں  کھڑی کررہا ہے۔

محمد المومنی نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ فلسطین میں صیہونی آباد کاری کی روک تھام اور سلامتی کونسل کی قرارداد 2334 پر عمل درآمد یقینی بنانے کے لیے موثر اقدامات کریں اور اسرائیل کو اس قرارداد کا پابند بنائیں۔