You are here: Home
 
 

‎غزہ میں فلسطینی مظاہرین کے قتل عام پر سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس طلب

E-mail Print PDF

0Pala10901نیویارک (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) کل سوموار کو فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی کی مشرقی سرحد پر ’عظیم الشان واپسی مارچ‘ کے شرکاء پر اسرائیلی فوج کی وحیشانہ فائرنگ اور بڑی تعداد میں شہریوں کی ہلاکتوں کے بعد آج اس معاملے پر غور کے لیے سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس طلب کیا گیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق اقوام متحدہ میں سعودی عرب اور فلسطین کے مندوبین نے کہا کہ انہوں نے غزہ میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں فلسطینیوں کے قتل عام پرغور کے لیے آج منگل کو سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے۔

فلسطینی مندوب ریاض منصور نے کہا کہ فلسطینی ہائی کمشن کی طرف سے جنرل اسمبلی کو بھی ایک پیغام جاری کیا گیا ہے جس میں فلسطین میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں فلسطینیوں کا قتل عام روکنے پر زور دیا گیا ہے۔

فلسطینی مندوب نے غزہ میں قابض اسرائیلی فورسز کے ہاتھوں فلسطینیوں پر فائرنگ کو وحشیانہ قرار دیتے ہوئے نہتے فلسطینیوں کے قاتلوں کو قانون کے کٹہرے میں لانے اور نہتے شہریوں کو تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا۔

ریاض منصور نے کہا کہ وہ اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے سفیر عبداللہ المعلمی سے بھی ملاقات کریں گے جس کے بعد سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس بلایا جائےگا۔

خیال رہے کہ کل سوموار کے روز فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی اور اسرائیل کی سرحد پر ہونے والی جھڑپوں میں 55 فلسطینی شہید اور اڑھائی ہزار زخمی ہوچکے ہیں۔