You are here: فلسطین غزہ میں فلسطینی مظاہرین کے قتل عام کی آزادانہ تحقیقات کی جائیں:’اونروا‘
 
 

غزہ میں فلسطینی مظاہرین کے قتل عام کی آزادانہ تحقیقات کی جائیں:’اونروا‘

E-mail Print PDF

0Pala10922مقبوضہ بیت المقدس ( فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) فلسطینی پناہ گزینوں کی بہبود کے ذمہ دار اقوام متحدہ کی ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی’اونراو‘ نے 30 مارچ کے بعد غزہ کی مشرقی سرحد پر جمع ہونے والے فلسطینی مظاہرین کے اسرائیلی فوج کے ہاتھوں قتل عام کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق ’اونروا‘ کی طرف سے جاری کرد بیان میں غزہ میں جاری فلسطینی احتجاج اور اسرائیلی فوج کی طرف سے طاقت کے استعمال کی شدید مذمت کی گئی ہے۔

بیان کے مطابق غزہ کی پٹی اور اسرائیل کے درمیان سرحد پر فلسطینیوں نے احتجاجی خیمے لگا رکھے ہیں۔ اسرائیلی فوج کی طرف سے حالیہ چار ہفتوں کے دوران دسیوں فلسطینیوں کو شہید اور  ہزاروں کو زخمی کیا گیا۔ صیہونی فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے دس ہزار فلسطینیوں میں سے کئی سو کی حالت بدستور تشویشناک ہے۔

بیان میں زور دیا گیا ہے غزہ کی پٹی میں پرامن فلسطینی مظاہرین کے خلاف طاقت کے وحشیانہ استعمال کا سلسلہ اب بند ہونا چاہیے۔ اسرائیلی فوج ایک بار نہیں بلکہ باربار فلسطینی مظاہرین کے خلاف طاقت کا اندھا دھند استعمال کر رہی ہے۔

خیال رہے کہ سوموار 14 مئی کو اسرائیلی فوج نے مشرقی غزہ میں حق واپسی کے لیے جمع ہونے والے فلسطینیوں پر قیامت ڈھا دی تھی جس کے نتیجے میں 60 فلسطینی شہید اور ہزاروں زخمی ہوگئے تھے۔