You are here: فلسطین صیہونی عدالت سے فلسطینی شہری کو 22 سال قید، 60 ہزارڈالر جرمانہ
 
 

صیہونی عدالت سے فلسطینی شہری کو 22 سال قید، 60 ہزارڈالر جرمانہ

E-mail Print PDF

0Pala7933الخلیل (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسرائیل کی ’عوفر‘ نامی ایک فوج داری عدالت نے زیرحراست فلسطینی شہری کو مزاحمتی کارروائیوں میں ملوث ہونے کے الزام میں بائیس سال قید اور کم سے کم دو لاکھ شیکل جرمانہ کی سزا سنائی ہے۔ امریکی کرنسی میں یہ رقم 60 ہزار ڈالر سے زائد ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق گذشتہ روز اسرائیل کی فوجی عدالت نے اسماعیل ابراہیم النعامین کو 22 سال قید اور 2 لاکھ شیکل جرمانہ کی سزا سنائی۔ النعامین کا تعلق دریائے اردن کے مغربی کنارے کے جنوبی شہر الخلیل سے ہے۔

اسرائیلی پراسیکیوٹر جنرل کی جانب سے فلسطینی شہری ابراہیم النعامین پر الزام عائد کیا کہ اس نے یبنا شہر میں دو اگست 2017ء کو ایک کاروباری مرکز میں چاقو کے حملے میں ایک صیہونی آباد کار کو شدید زخمی کردیا تھا۔ النعامین اسی کاروباری مرکز میں ملازمت کرتا تھا۔