You are here: حماس غزہ کی مکمل ناکہ بندی تک احتجاج کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا: اسماعیل ھنیہ
 
 

غزہ کی مکمل ناکہ بندی تک احتجاج کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا: اسماعیل ھنیہ

E-mail Print PDF

0Pala112019غزہ (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسلامی تحریک مزاحمت ’حماس‘ کے سیاسی شعبے کے سربراہ اسماعیل ھنیہ نے کہا ہے کہ جب تک غزہ کی پٹی پر مسلط کردہ پابندیاں اور محاصرہ مکمل ختم نہیں کیا جاتا، غزہ میں احتجاج اور حق واپسی کی تحریک جاری رہے گی۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق ایک تقریب سے خطاب میں اسماعیل ھنیہ کا کہنا تھا کہ غزہ کی پٹی میں تحریک حق واپسی کے احتجاج کا اصل مقصد غزہ کی پٹی پر مسلط کردہ پابندیوں کا خاتمہ ہے۔ یہ احتجاج اپنے منطقی انجام اور اہداف کے حصول تک جاری رہے گا۔

انہوں نے کہا کہ غزہ حق واپسی مارچ  اور ناکہ بندی توڑنے کی کوشش قضیہ فلسطین کی دفاعی لائن ہے۔ یہ تحریک اپنے اہداف اور مقاصد کے حصول تک جاری رہے گی۔ جب تک غزہ کا محاصرہ ختم نہیں کیا جاتا اس وقت تک کوئی اور تجویز قبول نہیں کی جائے گی اور نہ ہی کوئی نام نہاد حل قابل قبول ہوگا۔

خیال رہے کہ 30 مارچ 2018ء سے غزہ کی پٹی میں شہری روزانہ کی بنیاد پر ریلیاں نکال رہے ہیں۔ اسرائیلی فوج فلسطینی شہریوں کو احتجاج سے روکنے کے لیے طاقت کے وحشیانہ حربے بھی استعمال کررہا ہے۔ اب تک 180 فلسطینی شہید اور 19 ہزار سے زائد شہری زخمی ہوچکے ہیں۔