You are here: فلسطین صیہونی فوج نے بیت المقدس میں فلسطینی نوجوان گولیوں سے چھلنی کردیا
 
 

صیہونی فوج نے بیت المقدس میں فلسطینی نوجوان گولیوں سے چھلنی کردیا

E-mail Print PDF

0Pala112020مقبوضہ بیت المقدس (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسرائیلی فوج نے مقبوضہ بیت المقدس میں ایک نہتے فلسطینی نوجوان کو بے رحمی کے ساتھ گولیاں مار کر شہید کردیا۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق گذشتہ روز اسرائیلی فوجیوں نے بیت المقدس میں باب العامود کے مقام پر ایک فلسطینی نوجوان کو گولیاں مار کر زخمی کیا اور اسے زخمی حالت میں سڑک پر پھینک دیا گیا۔ اس کے جسم سے خون فواروں کی طرح نکلتا رہا مگر امدادی کارکنوں کو اس کے قریب جانے اور اس کی جان بچانے کی اجازت نہیں دی گئی۔

القدس میڈیا سینٹر نے بتایا کہ فلسطینی نوجوان کا بے رحمی کے ساتھ قتل کا واقعہ منگل کو المصرارہ صیہونی کالونی کے قریب باب العامود میں پیش آیا۔ اسرائیلی فوج نے واقعے کے بعد علاقے کو سیل کرکے فلسطینی شہریوں کی آمد ورفت بھی بند کردی۔

رپورٹ کے مطابق فلسطینی وزارت صحت نے اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے ایک فلسطینی نوجوان کی شہادت کی تصدیق کی گئی ہے۔ بعد ازاں شہید کی شناخت محمد یوسف شعبان علیان کے نام سے کی گئی ہے اور اس کا تعلق بیت المقدس کے علاقے قلندیا سے بتایا جاتا ہے۔