قبلہ اول کے دو محافظوں کی طلبی، خاتون مسجد اقصیٰ سے بے دخل

Print

0Pala11710مقبوضہ بیت المقدس (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسرائیلی فوج نے فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس سے تعلق رکھنے والے دو فلسطینیوں کو جو مسجد اقصیٰ کے محافظ دستے میں شامل ہیں کو  تفتیشی مرکز میں پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔  ایک دوسری کارروائی کے دوران صیہونی پولیس نے مسجد اقصیٰ کے باب الرحمۃ کے قریب سے ایک خاتون کو وحشیانہ تشدد کے بعد پندرہ دن کے لیے مسجد میں داخلے پر پابندی عائد کردی۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق صیہونی حکام نے مسجد اقصیٰ کے دیرینہ محافظوں احمد دمیری اور غازی عسیلہ کو گذشتہ روز نوٹس جاری کیے کہ وہ خود کو القشلہ پولیس تھانے میں پیش کریں۔

ادھر اسرائیلی پولیس نے بیت المقدس سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون نمازی براء غزاوی کو دو ہفتوں کے لیے قبلہ اول سے بے دخل کردیا۔

غزاوی نے بتایا کہ صیہونی حکام نے اسے کئی گھںٹوں تک حراست میں رکھا اور اسے حبس بے جا میں غیرانسانی ماحول میں رکھا گیا، جس کے بعد اسے پندرہ روز کے لیے قبلہ اول میں داخلے سے روک دیا۔