You are here: Home
 
 

امریکی یہودی تنظیم کے ارکان کو اسرائیل داخلے سے روک دیا گیا

E-mail Print PDF

0Pala9807مقبوضہ بیت المقدس (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسرائیل کے عبرانی اخبارات کے مطابق اسرائیلی داخلی سلامتی کے حکام نے صیہونی ریاست کے بائیکاٹ میں سرگرم امریکی یہودیوں کی ایک تنظیم کے ارکان کر تل ابیب داخلے سے روک دیا گیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق عبرانی اخبار’ہارٹز‘ نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ امریکا میں سرگرم امریکی یہودیوں کے ایک گروپ ’وائس آف جیوش فار پیس‘ کے ارکان تل ابیب پہنچنا چاہتے تھے مگر صیہونی وزارت داخلہ نے انہیں تل ابیب میں داخل ہونے سے روک دیا۔

رپورٹ کے مطابق امریکی یہودیوں کے اس گروپ کے اسرائیل میں داخلے پر پابندی کی وجہ تنظیم کی جانب سے اسرائیل کے بائیکاٹ کے لیے جاری عالمی تحریک کی حمایت ہے۔ اس تنظیم نے امریکا میں اسرائیلی بائیکاٹ کے لیے ہونے والی سرگرمیوں میں حصہ لینے کے ساتھ ساتھ خود بھی بائیکاٹ کیا ہے۔

عبرانی اخبار کے مطابق وائس آف جیوش فار پیس ان 20 امریکی گروپوں میں شامل ہے جن کے اسرائیل میں داخلے پر پابندی عائد ہے۔