You are here: Home
 
 

فلسطینی بچی عہد تمیمی کی گرفتاری پر ’یو این‘ کا اظہار تشویش

E-mail Print PDF

0Pala9815نیویارک (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے ایک بیان میں اسرائیلی فوجیوں کو تھپڑ مارنے کے الزام میں ایک فلسطینی بچی کی گرفتاری پر تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق یو این سیکرٹری جنرل گوٹیریس کے ترجمان اسٹیفن ڈوگریک نے کہا کہ سیکرٹری جنرل کو فلسطینی بچی عہد تمیمی کی اسرائیلی فوج کے ہاتھوں گرفتاری پر تشویش ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم کسی بھی ملک میں بچوں کی گرفتاری پر خاص توجہ دیتے ہیں۔ فلسطین میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں بچوں کی گرفتاریاں باعث تشویش ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں عہد تمیمی کی گرفتاری پر افسوس اور تشویش ہے۔ ہرشخص کو آزادی اظہار کا حق ہے۔

ڈوگریک نے القدس کے حوالے سے ’یواین‘ کے موقف کو دہرایا اور کہا کہ القدس کا مسئلہ اقوام متحدہ کے فورم پر حل طلب مسائل میں  پہلی ترجیح ہے۔ اس مسئلے کو فلسطین اور اسرائیل کی منشاء کے مطابق بات چیت کے ذریعے حل ہونا چاہیے۔

خیال رہے کہ اسرائیلی فوج نے فلسطینی بچی عہد تمیمی کو 19 دسمبر 2017ء کو حراست میں لیا تھا۔ اسرائیلی فوج کی طرف سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ عہد تمیمی نے اسرائیلی فوجیوں کو تھپڑ مارے تھے۔ اس الزام میں اس کی والدہ ، والد اورایک اور لڑکی کو بھی گرفتار کرلیا تھا۔