You are here: Home
 
 

غرب اردن عن قریب صیہونی ریاست کا حصہ ہوگا: اسرائیلی وزیر

E-mail Print PDF

0Pala11213مقبوضہ بیت المقدس (فلسطین نیوز۔مرکز اطلاعات) اسرائیلی کابینہ میں وزیر تعلیم اور ’جیوش ہوم‘ نامی شدت پسند مذہبی سیاسی جماعت کے صدر نفتالی بینیٹ نے دعویٰ کیا ہے کہ ’یہودی والسامرۃ‘ (دریائے اردن کا مغربی کنارہ) اور اس کی تمام صیہونی کالونیاں عن قریب اسرائیلی ریاست کا حصہ ہوں گی۔

فلسطین نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق بیت لحم میں فلسطینی اراضی پر بنائی گئی ’نتیو ھافوت‘ نامی صیہونی کالونی سے 15 صیہونی گھروں کے انخلاء کے رد عمل میں اسرائیلی وزیر نے کہا کہ  پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔ جلد ہی غرب اردن اور اس کی تمام صیہونی کالونیاں اسرائیل کا حصہ ہوں گی۔

بینیٹ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے فلسطینی ٹیلی سے نکالے جانے والے صیہونیوں کے لیے نئی کالونی تعمیر کرنے کا وعدہ کیا ہے۔

خیال رہے کہ اسرائیلی سپریم کورٹ نے ’نتیو ھافوت‘ نامی ایک صیہونی کالونی کو 18 سال کے بعد خالی کرنے کا حکم دیا تھا جس کے بعد اس کالونی میں موجود پندرہ مکانات کو خالی کرایا گیا۔